کنٹونمنٹ بورڈز کے انتخابات میں کس سیاسی جماعت نے کتنی سیٹیں جیتیں؟

کنٹونمنٹ بورڈز کے انتخابات میں لاہور سے مسلم لیگ ن نے میدان مار لیا، کراچی فیصل اور ملیر کینٹ سے تحریک انصاف جیت گئی۔ پشاور میں پیپلز پارٹی سب سے آگے، گوجرانوالہ اور ایبٹ آباد میں تحریک انصاف نے نون لیگ کو ہرا دیا

ملک بھر کےکنٹونمنٹ بورڈز کے بلدیاتی انتخابات کے غیرسرکاری اور غیر حتمی نتائج سامنے آگئے ہیں۔

ملک کے 41کنٹونمنٹ بورڈز کے 212 وارڈز میں 1560 امیدواروں کے درمیان مقابلہ ہوا جبکہ پولنگ کا عمل صبح 8 بجے شروع ہوا جو شام 5 بجے تک جاری رہا۔

غیرسرکاری اور غیر حتمی نتائج کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے 63، مسلم لیگ ن کے 59، آزاد امیدوار 52، پیپلزپارٹی کے 17، متحدہ قومی موومنٹ کے 10، جماعت اسلامی کے 7، بلوچستان عوامی پارٹی اور عوامی نیشنل پارٹی کے 2، 2 امیدوار کامیاب قرار پائے۔

کنٹونمنٹ بورڈز کے انتخابات میں لاہور سے مسلم لیگ ن نے میدان مار لیا، کراچی فیصل اور ملیر کینٹ سے تحریک انصاف جیت گئی۔ پشاور میں پیپلز پارٹی سب سے آگے، گوجرانوالہ اور ایبٹ آباد میں تحریک انصاف نے نون لیگ کو ہرا دیا۔

سیالکوٹ اور واہ کینٹ سے ن لیگ کامیاب، حیدر آباد میں ایم کیو ایم نے میدان مار لیا، کوئٹہ، ملتان اور سرگودھا میں آزاد امیدواروں جیت گئے۔راولپنڈی میں مسلم لیگ ن کو سبقت حاصل ہوئی۔

انتخابات کے لیے پولنگ اسٹیشنوں میں اندر اور باہر سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے۔

42 کنٹونمنٹ بورڈز میں امیدواروں کے درمیان سخت مقابلہ ہوا۔ کنٹونمنٹ بورڈ بلدیاتی انتخابات میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے 180، مسلم لیگ ن کے 143 اور پیپلز پارٹی کے 112 امیدواروں نے حصہ لیا۔

کراچی میں 6 کنٹونمنٹ اور 42 وارڈز ہیں لیکن یہاں کوئی بھی جماعت تمام سیٹوں پر امیدوار نہیں اتار سکی۔ پی ٹی آئی نے کراچی میں سب سے زیادہ 41 امیدوار میدان میں اتارے تھے۔ کراچی میں پیپلز پارٹی 40، جماعت اسلامی 38 اور ایم کیو ایم کے 32 امیدوار میدان میں تھے۔

بشکریہ سما

لاہور اور والٹن کنٹونمنٹ میں 10، 10 وارڈز ہیں جبکہ 20 نشستوں پر 268 امیدوار مدمقابل تھے۔ لاہور کنٹونمنٹ میں 110، والٹن میں 158 امیدوارتھے۔

پنجاب میں ن لیگ نے میدان مارلیا

پنجاب کنٹونمنٹ بورڈ کے تمام113 وارڈز کے غیر سرکاری نتائج سامنے آگئے ہیں۔ پنجاب میں مسلم لیگ ن کا پلڑا بھاری رہا ، اپوزیشن جماعت مسلم لیگ ن 51 نشستوں کے ساتھ سب سے آگے ہے۔

صوبہ پنجاب میں کنٹونمنٹ بورڈ کے تمام113 وارڈز کے غیر سرکاری نتائج کے مطابق مسلم لیگ ن 51، آزاد امیدوار 32،پی ٹی آئی 28 ، جماعت اسلامی 2 وارڈز میں کامیاب ہوئی جبکہ پیپلز پارٹی ایک بھی نشست حاصل نہ کر سکی ۔

لاہور میں والٹن اور لاہور کینٹ مسلم لیگ ن نے جیت لیے جبکہ چکلالہ کینٹ میں بھی پی ٹی آئی کو اپ سیٹ شکست ہوئی۔ اس کے علاوہ واہ کینٹ میں مسلم لیگ ن نےجیت کر تحریک انصاف کو بڑا دھچکا پہنچایا۔

وہیں گوجرانوالا میں تحریک انصاف نے جیت کر مسلم لیگ ن کو مات دی، اس کے علاوہ بہاولپور، جہلم اور کھاریاں میں تحریک انصاف نے میدان مار لیا۔ ملتان کینٹ کی 10 میں سے 9 نشستیں آزاد امیدوار لے اُڑے۔

دوسری جانب پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر و قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہبازشریف نےکہاہے کہ کنٹونمنٹ بورڈ کے انتخابات میں ن لیگ پر اپنے ووٹ کے ذریعے اعتماد کا اظہار کرنے پر عوام کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔

اپنے بیان میں شہباز شریف کا کہنا تھاکہ کنٹونمنٹ بورڈ کے انتخابات میں جو کامیابی مل رہی ہے، عوام کا مسلم لیگ ن پر بھروسے اور یقین کا ثبوت ہے۔

پی ٹی آئی کو کراچی میں بھی اپ سیٹ

گزشتہ روز ہونے والے کنٹونمنٹ بورڈ کے انتخابات میں کراچی سے پاکستان تحریک انصاف کو اپ سیٹ کا سامنا کرنا پڑا۔

تحریک انصاف سے تعلق رکھنے والے صدر پاکستان ڈاکٹر عارف علوی اور گورنر سندھ عمران اسماعیل کے حلقے کلفٹن میں پی ٹی آئی کو شکست ہو گئی۔

کلفٹن کینٹ کی 10 میں سے 4 نشستیں پیپلز پارٹی نے جیت لی ہیں جبکہ تحریک انصاف اور جماعت اسلامی نے دو دو نشستیں حاصل کیں، دو نشستوں پر آزاد امیدوار کامیاب قرار پائے۔

فیصل کینٹ کی 10 میں سے پی ٹی آئی نے 6 نشستیں جیت کر واضح برتری حاصل کر لی جبکہ ملیر کی 10 میں سے 5 نشستیں تحریک انصاف لے گئی۔ پیپلز پارٹی اور جماعت اسلامی نے دو، دو نشستیں جیتیں۔

منوڑہ کینٹ کی دونوں نشستوں پر پیپلز پارٹی کامیاب رہی جبکہ کورنگی کریک کینٹ کی 5 میں سے 2 نشستیں مسلم لیگ ن جیت گئی۔ پیپلز پارٹی، پی ٹی آئی اور ایم کیو ایم کی ایک ایک نشست رہی۔ کراچی کنٹونمنٹ بورڈ کی 2 نشستوں پر ایم کیو ایم کامیاب رہی جبکہ ایک نشست پیپلز پارٹی کے نام رہی۔

مزید خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button