آخر پنجاب کا سینئر وزیر علیم خان استعفیٰ کیوں دینا چاہتا ہے؟

ذرائع کا کہنا ہے کہ سینئر صوبائی وزیر عبدالعلیم خان کا وزیراعظم کی جانب سے جواب کا انتظار ہے

محمد ہمایوں

اسلام آباد: سینئر صوبائی وزیر عبدالعلیم خان نے وزارت سے استعفیٰ دینے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

ذرائع کے مطابق چند روز قبل عبدالعلیم خان نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات میں اپنا استعفی ٰپیش کیا جس پر وزیراعظم نے انہیں استعفیٰ واپس کرتے ہوئے کچھ دیر انتظار کرنے کو کہا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ سینئر صوبائی وزیر عبدالعلیم خان کا وزیراعظم کی جانب سے جواب کا انتظار ہے۔

صوبائی وزیر عبدالعلیم خان کا کہنا ہے کہ ذاتی وجوہات کی بنا پر وزارت کی ذمہ داری ادا نہیں کر سکتا تاہم علیم خان کے استعفے کے حوالے سے حتمی فیصلہ وزیراعظم عمران خان کریں گے۔علیم خان اور وزیر اعظم عمران خان (فائل فوٹو)

ذرائع کا کہنا ہے کہ عبدالعلیم خان کی وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار سے بن نہیں پارہی اور دونوں ایک دوسرے کے سخت مخالف بن چکے ہیں، جس کی وجہ سے علیم خان نے استعفی دینے کا فیصلہ کیا ہے۔

علیم خان ذاتی محفلوں میں عثمان بزدار کی شکایات کرتے ہوئے پائے جاتے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ وہ وزیر اعلی کی وجہ سے غیر موثر وزیر بن چکے ہیں، انکے محکمے والے بھی ان کی نہیں سنتے، اسلئے ایسے وزیر بننے سے بہتر ہےکہ سکون سے گھر میں بیٹھا جائے۔

یاد رہےکہ علیم خان بھی پنجاب کے وزیر اعلیٰ کے عھدے کے لئے اہم امیدوار تھے، تاہم پرچی آخر میں عثمان بزدار کی نکل آئی۔ گذشتہ تین برسوں سے دوںوں حضرات کی آپس میں نہیں بن پائی ہے۔ جس کی وجہ سے بات استعفے تک آن پہنچی ہے۔

مزید خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button