پاکستان، نیوزی لینڈ ون ڈے سیریز کا اسٹیٹس کیوں تبدیل کیا گیا؟

ون ڈے میچز راولپنڈی جبکہ ٹی ٹوئنٹی سیریز لاہور میں ہوگی

اسلام آباد: نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم پاکستان کیخلاف سیریز کھیلنے 18 سال بعد پاکستان پہنچ گئی ہے اور پی سی بی نے ون ڈے سیریز کا اسٹیٹس بھی تبدیل کردیا ہے۔

نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم ڈھاکا سے اسلام آباد ائیرپورٹ پہنچی۔  اسلام آباد پہنچنے پر مہمان ٹیم کا نجی ہوٹل میں کووِڈ ٹیسٹ ہوگا جس کے بعد کھلاڑی اپنی ٹریننگ شروع کریں گے۔

کورونا ٹیسٹ منفی آنے پر مہمان ٹیم کو پریکٹس کی اجازت ملے گی، نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم کا 15 ستمبر کو انٹر اسکواڈ میچ شیڈول ہے۔

علاوہ ازیں پاکستان کرکٹ بورڈ نے اعلان کیا ہے کہ پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان ہونے والی ون ڈے سیریز آئی سی سی کرکٹ ورلڈ کپ سوپر لیگ کا حصہ نہیں ہوگی بلکہ اس سیریز کا درجہ باہمی سیریز کا ہوگا۔

یہ بھی پڑھیے: ٹی ٹوئینٹی ورلڈ کپ کیلئے قومی اسکواڈ کا اعلان، بابر کپتان مقرر، سرفراز ڈراپ

پی سی بی کے مطابق سیریز میں ڈی آر ایس استعمال نہ ہونے کی وجہ سے  ان میچز کو ورلڈ سپر لیگ کا حصہ نہیں بنایا گیا۔

پی سی بی کا کہنا ہے کہ نیوزی لینڈ کی ٹیم 23-2022 میں پھر پاکستان آئے گی اور دو ٹیسٹ میچز اور تین ون ڈے میچز کی سیریز کھیلے گی۔ دونوں بورڈز نے فیصلہ کیا ہے کہ اس دورے میں کھیلے جانے والے ون ڈے میچز کو ورلڈ کپ 2023 کی کوالیفکیشن کے عمل کا حصہ بنایا جائے گا۔

پاکستان اور نیوزی لینڈ کےدرمیان پہلا ون ڈے میچ 17 ستمبر کو ہو گا۔ سیریز کے تین ون ڈے انٹرنیشنل میچز 17، 19 اور 21 ستمبر کو کھیلے جائیں گے جبکہ پانچ ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچز  25، 26 اور 29 ستمبر، یکم اور تین اکتوبر کو کھیلے جائیں گے۔

ون ڈے میچز راولپنڈی جبکہ ٹی ٹوئنٹی سیریز لاہور میں ہوگی۔

مزید خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button