سعودی عرب نے کھجوریں اتارنے کے لیے روبوٹ تیار کرلیا

ندیٰ البیطار نے ایک ایسا روبوٹ ڈیزائن کیا ہے جس کے آٹھ بازو اور ہاتھ ہیں

ویب ڈیسک: سعودی عرب کی ایک خاتون انجینیر نے ایک ایسا روبوٹ ایجاد کیا ہے جو شمسی توانائی کا استعمال کرتے ہوئے کھجور کے درختوں سے پکا ہوا پھل اتارنے میں مدد دینے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

العربیہ کی رپورٹ کے مطابق انجینئر ندیٰ البیطار کا کہنا تھا کہ اس نے ملک میں کھجور کے باغات میں کسانوں کو کھجوریں اتارتے دیکھا، کسان  کرین کی مدد سے کھجوریں اتارتے ہیں مگر کھجور کے بعض درخت 10میٹر سے زیادہ اونچے ہونے کی وجہ سے کرین کے ذریعے وہاں تک پہنچنا بھی مشکل ہوتا ہے۔

یہ بھی پڑھیے: گجرات کی لڑکی عمارہ لڑکا کیسے بن گئی؟

اس دوران اسے اندازہ ہوا کہ کھجوریں اتارنے کا عمل کتنا کٹھن اور خطرناک ہے اور اتنے لمبے درختوں کی وجہ سے کھجوریں اتارتے وقت گرنے کا خطرہ بھی بڑھ جاتا ہے۔

جس کے بعد خاتون نے اس کے متبادل طریقوں پر غور کرنا شروع کیا، اور ایسا روبوٹ تیار کیا جو کھجوریں اتارنے کے عمل میں معاون ثابت ہو۔

ندیٰ البیطار نے ایک ایسا روبوٹ ڈیزائن کیا ہے جس کے آٹھ بازو اور ہاتھ ہیں۔ تاہم اس نے بتایا کہ روبوٹ کو آپریٹ کرنے کے لیے مکینیکل انجینئرز اور فلائٹ انجینئرز کی ایک مربوط ٹیم کی ضرورت ہے۔

مزید خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button