سندھ میں کورونا کی پابندیاں نافذ، تعلیمی ادارے، ہوٹلز، شادی ہالز بند کرنے کا فیصلہ

ترجمان نے بتایا کہ پیر سے شاپنگ مالز اور بازار صبح 6 بجے سے شام 6 بجے تک کھلے رہیں گے، گروسری، بیکری اور فارمیسی کھلی رہیں گی

کراچی: سندھ حکومت نے وائرس کے بڑھتے ہوئے کیسز کے پیش نظر ایک بار پھر پابندی عائد کردی ہے۔

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی زیرصدارت کورونا ٹاسک فورس کا اجلاس ہوا، جس میں کورونا کے بڑھتے ہوئے کیسز کے پیش نظر اہم فیصلے کیے گئے۔

وزیر اعلیٰ سندھ کے ترجمان کے مطابق، کورونا ٹاسک فورس کے اجلاس میں پیر سے شادی ہالوں اور دیگر تقریبات پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، جبکہ بازار بھی ہفتے میں دو دن ہفتہ اور اتوار کو بند رہیں گے

یہ بھی پڑھیے: کورونا وائرس کی نئی صورتحال کے پیش نظر سندہ میں نئی پابندیاں عائد

ترجمان نے بتایا کہ پیر سے شاپنگ مالز اور بازار صبح 6 بجے سے شام 6 بجے تک کھلے رہیں گے، گروسری، بیکری اور فارمیسی کھلی رہیں گی جبکہ صوبے بھر میں مزارات بند رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

ترجمان کے مطابق ریستوراں پیر سے بند ہوں گے اور صرف ٹیک اوے کی اجازت ہوگی۔

ترجمان نے بتایا کہ پیر سے صوبے بھر کے تعلیمی اداروں کو بھی بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے لیکن سندھ میں امتحانات کے شیڈول کے مطابق ہوں گے جبکہ سرکاری اور نجی شعبے میں پچاس فیصد عملہ حاضر ہوگا۔ ترجمان کے مطابق ان تمام فیصلوں پر پیر سے عملدرآمد کیا جائے گا۔

مزید خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button