خاتون وزیر سیاحت نے ان کے ساتھ ہر سیلفی پر 100 روپے فیس لگادی

"سیلفیاں لینے کے دوران بہت زیادہ وقت ضائع ہوتا ہے، جو بعض اوقات گھنٹوں کی تاخیر کا باعث بنتا ہے"

ویب ڈیسک: وزیر سیاحت اوشا ٹھاکر، جن کا تعلق انتہا پسند ہندو پارٹی بی جے پی سے ہے، نے اپنے ساتھ سیلفی لینے کے خواہاں افراد کے لئے ہر ایک سیلفی پر 100 روپے فیس دینے کا اعلان کیا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق، اندور میں انہوں نے اپنے حامیوں سے کہا کہ اگر وہ اس کے ساتھ سیلفی لینا چاہیں تو وہ فی سیلفی 100 روپے ادا کریں۔

یہ بھی پڑھیے: بندر کی برتن دھونے کی ویڈیو وائرل

میڈیا رپورٹس کے مطابق، مدھیہ پردیش کے وزیر سیاحت نے میڈیا کو بتایا کہ سیلفیاں لینے کے دوران بہت زیادہ وقت ضائع ہوتا ہے، جو بعض اوقات گھنٹوں کی تاخیر کا باعث بنتا ہے، لہذا اس نے فیصلہ کیا ہے کہ اب جو بھی اس کے ساتھ سیلفی لینا چاہتا ہے وہ 100 روپے فی سیلفی ادا کرے، ورنہ اپنا راستہ ناپے۔

ہندوستانی ریاست مدھیہ پردیش کی سیاحت کی 55 سالہ وزیر اوشا ٹھاکر اکثر اپنے متضاد بیانات کی وجہ سے اکثر خبروں میں رہتی ہیں۔ انہوں نے حال ہی میں پارٹی کارکنوں کے پیش کردہ پھولوں کے گلدستے قبول کرنے سے بھی انکار کردیا تھا اور کہا تھا کہ انہیں پھول پیش کش نہ کیے جائیں۔

مزید خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button